پیپلز پارٹی میں آج کل اچھا رواج چل نکلا ہے جب بھی کوئی پیپلز پارٹی کے خلافِ توقعہ بات کرتا ہے تو بلاول بھٹو کے کندھے پر بندوق رکھ کر گولی چلائی جاتی ہے جو کہ پیپلز پارٹی کے لیڈران کی نظر میں ابھی بچہ ہے اور اس بچے کو اپنے قائدکے دور میں بنائے گئے قانون کے اہم نکات تک کا نہیں معلوم،اور معلوم ہوگا بھی کیسے؟؟کیونکہ وہ نکات لندن کے ( O Level )اسکولوں میں بتائے ہی نہیں جاتے جبکہ اُس قانون یعنی 1973 کے قانون کے بارے میں پاکستان کا ہر میٹرک پاس لڑکا یہ لڑکی کم از کم ایک ،دو نکات تو لازمی جانتے ہی ہونگے خیر بات اپنوں پر غصّہ نکالنے کی ہو رہی تھی جسکا حل بھی پارٹی کے لیڈران نے کیا خوب نکالا۔

اپنوں کے تنزنے کردیا ،اپنوں کو اس قدر بیگانا
بن گئی یہ عادت کندھا کوئی، اور نشانہ کسی اور کو لگانا

الیکشن سے قبل ایک دوسرے کی عوام کے سامنے دھجیاں اُڑاتے یہ سیاستدان آ ج کندھے سے کندھا ملا کر مختلف مواقع میں اسطرح ایک ساتھ نظر آتے ہیں جیسے ’’کُم کے میلے میں دو بچھڑے دوست مل گئے ہوں‘‘۔اسلامی جمہوریہ پاکستان کے ان سیاستدانو ں کا یہ منافقانارویہ اور دوغلا پن صرف پاکستانی عوام کیلئے ہی کیوں ہے ؟جمہوریت ،انصاف اور سچ کے گُن گانے والے یہ سیاستدان اُس زنجیر کی مانند ہیں جسکی تقریباّ ہر کڑی میں زنگ تو ہے ہی اور کچھ کڑیاں زنگ کی وجہ سے ٹوٹ گئی ہیں یا تو ٹوٹنے والی ہیں ۔ پاکستان میں بڑھتی ہوئی مہنگائی ، کرپشن اور چوری میں بلواسطہ یا بلاواسطہ طور پر ملوث ان سیاستدانوں نے مذہبی رسم و رواج کوبھی نہ چھوڑا جسکی وجہ سے حج اسکینڈل سامنے آئے ۔

میاں نواز شریف کے ’’بدلتے ہوئے پاکستان‘‘ کے خواب نے پاکستانی عوام کو جب سے بے خوابی کا شکا ر کردیا ہے جب سے وہ حکومت میں آئے ہیں، مہنگائی اور لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے یہ دعویدار اُس وقت پلٹ گئے جب انہوں نے پرائم منسٹرہاؤس کی ٹھنڈی ہوا کھا لی ،اِسی طرح اُبلتے ہوئے عمران خان اپنے ہی لوگوں سے مجبور برف کی طرح جم گئے۔خیبر پختونخواہ کی حکومت کو شفاف دکھانے کیلئے ہر بات کو وفاق پر ڈال دینا ان کا وطیرہ ہی بن گیا ہے،پاکستان کے مسائل سے بے خبر عمران خان کو آئے دن پریس کانفرنس کا چسکا سا پڑھ گیا ہے مگر ہر آنے والی نئی حکومت یہ کیوں بھول جاتی ہے کہ ایک بار پھر الیکشن آئیں گے

مخلص ہوں تجھ سے بقول میرے دانش
مگر،،،اپنے ہر قول سے ناواقف ہوں

(دانش خان)




Enhanced by Zemanta

Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here